آئی جی سندھ الزامات : رینجرز اور آئی ایس آئی افسروں کو ہٹانے کا فیصلہ

کیپٹن(ر) صفدر گرفتاری، آئی جی سندھ کا مبینہ اغوا، انکوائری کے نتیجے میں آرمی چیف کے حکم پر ذمہ داران فوجی افسران کو عہدوں سے ہٹانے کا فیصلہ

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ نے بتایا کہ مزار قائد کی بے حرمتی کے پس منظر میں 18 اکتوبر کو مبینہ طور پر آئی جی سندھ کو اغوا کر کے کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری پر زبردستی عمل درآمد کرانے کے معاملے پر آئی جی سندھ کے تحفظات کے حوالے سے آئی جی سندھ کے الزامات پر کورٹ آف انکوائری کی رپورٹ جاری کردی گئی ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آئی جی سندھ کے واقعہ کی کورٹ آف انکوائری آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی ہدایت پر کی گئی، کورٹ آف انکوائری کی سفارشات پر متعلقہ افسران کو ذمے داریوں سے ہٹا دیا گیا ہے۔

آئی ایس پی آر نے یہ بھی بتایا کہ ضابطے کی خلاف ورزی پرافسران کیخلاف کارروائی جی ایچ کیو میں کی جائے گی، فی الحال کورٹ آف انکوائری کی سفارشات پر متعلقہ افسران کو ذمے داریوں سے ہٹا دیا گیا ہے۔

عہدوں سے ہٹائے جانے والے فوجی افسران میں سندھ رینجرز اور آئی ایس آئی کے افسران شامل ہیں جنہوں نے واقعہ پر پولیس کے سست ایکشن کی صورت میں ایکشن لیا۔

کورٹ آف انکوائری نے اپنی سفارشات میں لکھا کہ ان افسران کو تحمل اور ذمے داری کا مظاہرہ کرنا چاہیے تھا مگر ان افسران نے جذباتی ردعمل کا مظاہرہ کیا۔ ان افسران کو ایسی صورتحال پیدا کرنے سے گریز کرنا چاہیے تھے۔

کورٹ آف انکوائری کی رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا کہ ان افسران کی غلطی کی وجہ سے 2 ریاستی اداروں کے درمیان غلط فہمی پیدا ہوئی جس کی مکمل ذمہ داری ان پر ہے۔

The post آئی جی سندھ الزامات : رینجرز اور آئی ایس آئی افسروں کو ہٹانے کا فیصلہ appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: