آپ جواب جمع کروانے میں شرما کیوں رہے ہیں ؟ فیصل واوڈا نااہلی کیس میں عدالت نے یہ بات کسے کہی ؟ جانیے

اسلام آباد (ویب ڈیسک) تحریک انصاف کے نامور رہنما اور وفاقی وزیر فیصل واؤڈا کی نااہلی کے کیس کی سماعت کے دوروان جسٹس عامر فاروق نے فیصل واوڈا کے وکیل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا آپ جواب داخل کروانے سے شرمنا کیوں رہے ہیں ۔ آپ کو بتا رہے ہیں کہ آپ کے



کلائنٹ (فیصل واوڈا ) کا کنڈکٹ درست نہیں ، ہم ایسا کرتے ہیں نوٹس کی کاپی کابینہ کو بھجوا دیتے ہیں شاید وہاں سے جواب آجائے ۔ نامور وکیل جہانگیر جدون نے عدالت میں کہا کہ عدالت نے پوچھا تھا کہ فیصل واؤڈا اگر دہری شہریت رکھتے تھے تو وہ کس دن ترک کی؟اس کیس میں اب تک 16 سماعتیں ہو چکیں،ابھی تک جواب ہی داخل نہیں کرایا گیا ہے۔جسٹس عامر فاروق نے سوال کیا کہ آپ یہ بتائیں کہ فیصل واؤڈا امریکی شہری تھے اور شہریت کب ترک کی؟ انہوں نے کہا کہ تین پی ٹی آئی ارکان اسمبلی کےخلاف پٹیشن تھی، اچھی معاونت ملی تووہ خارج ہوگئیں،اس پر واوڈاکے وکیل نے کہاکہ فیصل نےبھی نااہلی کیس خارج کرنے کی متفرق درخواست دائر کی ہے۔ بیرسٹرجہانگیر جدون نے کہا کہ اس کا ایک حل ہے کہ فیصل واوڈا کو ذاتی حیثیت میں طلب کر کےپوچھا جائے۔عدالت نے درخواست کی سماعت 8 فروری تک ملتوی کرتے ہوئے فریقین کو ریکارڈ سمیت پیش ہونے کا حکم دے دیا ۔







%d bloggers like this: