امریکہ میں فوتگی سے قبل مالک کی پالتو کتیا کے لیے 50 لاکھ ڈالر کی وصیت

واشنگٹن (این این آئی ) امریکا میں ایک امیر کاروباری شخص نے مرنے سے پہلے یہ وصیت لکھی ہے کہ فوتگی کے بعد اس کی جائیداد میں 5 ملین ڈالر کی رقم اس کی پالتو کتیا لولو کو دی جائے تاکہ وہ اپنی زندگی عیش وآرام کیساتھ گذرا سکے۔امریکی ٹی وی کے مطابق یہ واقعہ امریکی ریاست ٹینیسی کا ہے جہاں فوت ہونے والے شخصکی کوئی اولاد یا وارث نہیں تھا اور اس نے وصیت کی تھی کہ اس کے مرنے کے بعد اس کی جائیداد اس کی پالتو کتیا 8 سالہ لولو کو دی جائے۔لولو کی کفیل مارتھا برٹن

نے چینل کو بتایا کہ کتے کا مالک بل ڈوریس ایک کامیاب تاجر تھا جس کی شادی نہیں ہوئی تھی اور گذشتہ سال کے آخر میں اس کی موت ہوگئی تھی۔لولو کی دیکھ بھال کے لیے اس نے 50 لاکھ ڈالر کی وصیت لکھی اور یہ رقم کتیا کی کفیل برٹون کو دینے کا فیصلہ کیا تھا تاکہ وہ کتیا کی مناسب دیکھ بحال کر سکیں۔برٹن جو ڈوریس کی دوست رہی ہیں۔ مالک کے سفر کے دوران وہی کتیا کی دیکھ کرتی تھیں۔اس کا کہنا ہے کہ اسے واقعی کتیا بہت پسند آئی تھی۔دوسری جانب مصر میں ایک شخص نے ایک ڈاکٹر کی گاڑی محض اس لیے توڑ ڈالی کہ ڈاکٹر نے اس شخص کی بیوی کا اس کے گھر میںجا کر معاینہ کرنے سے انکار کردیا تھا۔عرب ٹی وی کے مطابق یہ واقعہ مصر کی بنی سویف گورنری کے شہر واسطی میں پیش آیا۔ مقامی ذرائع ابلاغ اور سوشل میڈیا میں اس واقعے کی ایک فوٹیج بھی نشر کی گئی ہے جس میں ایک شخص کو ایک کار پر اندھا دھند پتھر مارتے اور لاٹھیوں سے اس کے شیشے توڑتے دیکھا جا سکتا ہے۔ذرائع ابلاغ کے مطابق ایک مقامی شہری نے پوشیدہ امراض کے ماہر ڈاکٹر رفعت رمضان سے کہا کہ وہ اس کی بیمار بیوی کو اس کے گھر میں جاکر معائنہ کریں تاہم ڈاکٹر رمضان نے اس پر معذرت کی اور کہا اگر وہ گھر جا کر مریضہ کو دیکھیں گے تو انہیں اسپتال پہنچنے میں تاخیر ہوجائے گی۔ اس پر وہ شخص طیش میں آگیا اور اس نے ڈاکٹر کی گاڑی پر حملہ کرکے اس کی توڑ پھوڑ کی۔ڈاکٹر رفعت رمضان کی اہلیہ نیبتایا کہ ایک مقامی شہری نے اس کے شوہر سے کہا کہ وہ اس کے گھر میں جا کر اس کی بیمار بیوی کا معائنہ کریں مگر ڈاکٹر رمضان نے معذرت کی اور کہا کہ انہیں اسپتال پہنچنا ہے اور وہ گھر جا کر معائنہ نہیں کرسکتے۔ اس پر اس شخص نے سڑک پر کھڑی ان کی کار توڑ ڈالی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں