اچھی خبروں کا آغاز! ڈالر اور سونے کے بعد اسٹاک مارکیٹ بھی سنبھل گئی ، مارکیٹ میں زبردست تیزی، سرمایہ کاروں کو اربوں روپے کا فائدہ

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مسلسل 2 روز غیر یقینی صورتحال کے بعدپاکستان سٹاک مارکیٹ میں زبردست تیزی کی واپسی ، 100 انڈیکس میں 722.48 پوائنٹس کی تیزی دیکھی گئی۔تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں سیاسی افق پر چھائی غیر یقینی صورتحال کے باعث حصص مارکیٹ میں ملکی اور غیر ملکی سرمایہ کار پیسے لگانے


سے گریزاں ہیں جس کے باعث مسلسل ایک ہفتے کے دوران اتار چڑھا ئودیکھنے کو مل رہا ہے، جس کے باعث انڈیکس 40 ہزار کی نفسیاتی حد کھو بیٹھا تھا۔رواں ہفتے کے تیسرے کاروباری روز کے دوران ایک مرتبہ پھر زبردست تیزی کی واپسی ہوئی ہے، کاروبار کا آغاز مثبت انداز میں ہوا، صبح دس بجے تک انڈیکس میں 190.12 پوائنٹس کی تیزی دیکھی گئی۔ دوپہر بارہ بجے تک تیزی 265.09 پوائنٹس تک پہنچ گئی تھی۔کاروبار میں تیزی کا تسلسل اگلے گھنٹوں میں بھی دیکھنے کو ملا، دوپہر دو بجے کے قریب انڈیکس 732.82 پوائنٹس بڑھ گیا تھا۔تاہم پاکستان سٹاک مارکیٹ میں کاروبار کا اختتام 722.48 پوائنٹس کی سطح پر ہوا جس کے بعد 100 انڈیکس 39849.96 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ کر بند ہوا۔پورے کاروباری روز کے دوران کاروبار میں 1.85 فیصد کی بہتری ریکارڈ کی گئی اور 27 کروڑ 1 لاکھ 14 ہزار 188 شیئرز کا لین دین ہوا، جس کے بعد سرمایہ کاروں کو 120 ارب روپے سے زائد کا فائدہ پہنچا۔دوسری جانب ملک بھر میں فی تولہ سونے کی قیمت میں 300 روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔بین الاقوامی مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت میں 29 امریکی ڈالر کی تنزلی دیکھی گئی جس کے بعد عالمی مارکیٹ میں فی اونس سونے کی نئی قیمت 1884 امریکی کرنسی ہو گئی ہے۔بین الاقوامی مارکیٹ میں قیمتیں بڑھنے کے بعد ملکی صرافہ مارکیٹوں لاہور، کراچی، اسلام آباد، پشاور، حیدر آباد، سکھر، فیصل آباد، گوجرانوالہ، راولپنڈی سمیت دیگر جگہوں پر فی تولہ سونے کی قیمت میں 300 روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی اور نئی قیمت 1 لاکھ 13 ہزار روپے ہو گئی ہے۔فی تولہ سونے کی طرح دس


گرام سونے کی قیمت میں بھی 256 روپے کی گراوٹ دیکھی گئی اور نئی قیمت 96 ہزار 880 روپے ہو گئی ہے۔تاہم چاندی کی فی تولہ اور دس گرام کی قیمتیوں میں استحکام ریکارڈ کیا گیا جس کے بعد دونوں کی بالترتیب قیمت 1200 روپے اور 1028.80 روپے پر برقرار ہے۔دوسری جانب ملک بھر میں امریکی کرنسی کی تنزلی کا سلسلہ جاری ہے جس کے بعد روپے کی قدر میں اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے۔ رواں ہفتے کے تیسرے کاروباری روز کے دوران ایک مرتبہ پھر ڈالر 7 پیسے سستا ہو گیا۔ ملک بھر میں گزشتہ ایک سال کے دوران ملکی زر مبادلہ کے ذخائر میں بہتری کے باعث روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قدر میں گراوٹ دیکھنے کو مل رہی ہے، ایک سال کے دوران ملکی زر مبادلہ کے ذخائر میں چار ارب ڈالرز سے زائد کا اضافہ دیکھنے کو ملا۔ جس کے باعث گزشتہ دو ہفتوں کے دوران ڈالر تنزلی کا شکار ہے۔رواں ہفتے کے تیسرے کاروباری روز کے دوران سٹیٹ بینک آف پاکستان کی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق انٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں ڈالر مزید 7 پیسے سستا ہو گیا، امریکی کرنسی کی نئی قیمت 164 روپے 04 پیسے سے کم ہو کر 163 روپے 97 پیسے ہو گئی ہے۔ یاد رہے کہ رواں ہفتے کے پہلے کاروباری روز کے دوران انٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں امریکی کرنسی کی قدر 19 پیسے سستا ہو گئی تھی جس کے بعد ڈالر کی نئی قیمت 164 روپے 51 پیسے سے کم ہو کر 164 روپے 32 پیسے ہو گئی تھی۔دوسرے کاروباری روز کے دوران امریکی ڈالر مزید 28 پیسے سستا ہو گیا تھی، قیمت 164 روپے 32 پیسے سے کم ہو کر 164 روپے 04 پیسے ہو گئی تھی۔






%d bloggers like this: