ایسا الیکشن کرائیں گے کہ جو ہارے گا وہ بھی مانے گا کہ الیکشن صاف ہوا تھا ۔۔۔ عمرا ن خان نے ایسا سسٹم متعارف کروانے کا اعلان کر دیا کہ آپ بھی داد دیں گے

حافظ آ باد (ویب ڈیسک )وزیراعظم عمران خان نے کہاہے کہ 2021 میں سارے پنجاب کے لوگوں کو ہیلتھ انشورنش دی جائے گی ، جتنے مرضی جلسے کرنے ہیں کر لو لیکن جب تک لوٹا ہوا پیسہ واپس نہیں دیں گے آپ کو نہیں چھوڑوں گا ،وہ آدمی لندن میں بیٹھ کر ہماری فوج کے خلاف سازش کرتا ہے ، وہ یہ کہہ رہاہے کہ فوج کے



اندر بغاوت کی جائے ، اپنی چوری بچانے کیلئے نوازشریف تم ادھر تک پہنچ گئے ہو کہ فوج کے خلاف ہندوستان کی زبان بول رہے ہو ،میری حکومت ایسے الیکشن کروائے گی جو ہارے گا وہ بھی مانے گا کہ الیکشن شفاف ہواہے ، ہم الیکٹرانک ووٹنگ سے پورا فائدہ اٹھائیں گے ، ہم وہ سارے قدم اٹھائیں گے جب سارے کہیں گے صاف اور شفاف الیکشن ہوئے ہیں۔وزیراعظم عمران خان کا کہناتھا کہ حافظ آباد میں یونیورسٹی اور ہسپتال انشاءاللہ یہ ہم جلد سے جلد اس لیے بنائیں گے کہ یونیورسٹی اور ہسپتال آپ کی ضرورت ہے ، ہمارا فرض ہے کہ یہ ہم آپ کیلئے بنائیں ،اس سے زیادہ مجھے اس چیز کی خوشی ہے کہ پنجاب حکومت نے فیصلہ کیا کہ 2020 تک پچاس فیصد پنجاب کو ہیلتھ کارڈ دیئے جائیں گے ۔عمران خان کا کہناتھا کہ اگلے سال 2021 میں سارے پنجاب کے لوگوں کو ہیلتھ انشورنش دی جائے گی ، اب میں آپ کو سمجھانا چاہتاہوں کہ ہیلتھ کارڈ کیاہے ، ایک سفید پوش گھر ، تنخواہ دار لوگوں کے گھر اگر بیماری ہوتی ہے تو ہیلتھ کارڈ کے ذریعے ایک خاندان میں دس لاکھ روپے تک کہیں سے بھی علاج کروا سکتے ہیںچاہے وہ سرکاری ہو یا پھر پرائیوٹ ہسپتال ،یہ پہلی دفعہ پاکستان کی 73 سالہ تاریخ میں ایک عام آدمی کو اعتماد ہو گا کہ اگر بیماری ہوتی ہے اور پیسے نہیں تو ہمارے پاس ہیلتھ انشورنش ہو گی ۔دنیا کے امیر ترین ملکوں میں بھی اس طرح کی انشورنش نہیں ہوتی ۔اس سے حافظ آباد جیسے علاقوں میں پرائیویٹ ہسپتال بنیں گے ، پرائیویٹ ہسپتال اس لیے بنیں گے کہ ہیلتھ کارڈ کے باعث ہر کوئی علاج کروا سکے گا ، دیہاتوں میں صرف سرکاری ہسپتال ہیں ، کیونکہ لوگوں کے پاس پیسہ نہیں ہے ، پنجاب اور خیبر پختونخواہ میں ہیلتھ کارڈ کے باعث ہسپتالوں کا جال بچھ جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے پاکستان میں پہلی مرتبہ شہروں میں مزدوروں کیلئے پناہ گاہیں بنائیں ، پناہ گاہ میں وہ ٹھہرتا ہے اس کے پیسے بچ جاتے ہیں


اور سارا پیسہ اپنے بیوی بچوں کو بھیجتا ہے ، مجھے خوشی یہ ہے کہ ہمارا پاکستان کو فلاحی ریاست بنانے کا سفر شروع ہو چکاہے ۔عمران خان کا کہناتھا کہ نیا پاکستان ہاﺅسنگ سکیم کے تحت آپ بینکوں سے پانچ فیصد انٹرسٹ پر پیسے لے کر پانچ مرلے کا گھر بنا سکیں گے ،، لمبی قسطیں ہو گی ، جو آپ کرایہ دیتے ہیں وہ قسطیں دیں گے اور چھت اپنی ہو جائے گی ۔نوجوانوں کیلئے تعلیم کا ایک نصاب لائیں گے ، 73 سال میں پہلی مرتبہ ہماری حکومت یہ کر رہی ہے کہ سارے پاکستان میں ایک ہی نصاب ہو تاکہ غریب گھروں سے بھی بچے اوپر آئیں اور ڈاکٹر یا انجینئرز بنیں ، جب 2013 میں کے پی کے میں حکومت آئی تو تین سال ہم سنتے رہے کہ کہاں ہے نیا پختونخواہ ، جب الیکشن ہوا تو کے پی کے کی تاریخ ہے کہ وہ ایک جماعت کو دوسری باری نہیں دیتے لیکن پی ٹی آئی کو پہلے سے زیادہ ووٹ ملے ،، اس لیے کیونکہ ہمارے دور میں کے پی کے میں غربت 27 فیصد سے کم ہو کر 18 فیصد پر آ گئی ہے ۔اس لیے لوگوں نے ووٹ دیاہے ، انشاءاللہ یہی میرا خواب ہے کہ اپنے ملک میں غربت کم کریں ، نچلے طبقے کو اوپر لانے کیلئے پالیسی بنائیں ۔ان کا کہناتھا کہ اس وقت جو پاکستان میں ہم نے دوسرا کام کرناہے ، وہ قانون کی بالادستی قائم کرنا ہے ، اس وقت ملک میں سرکس لگی ہوئی ہے ،یہ وہ لوگ ہیں جنہوں نے تیس سال ملک کو لوٹا ،یہ امیر ترین ہو گئے اور قوم کو قرضوں میں ڈوبا دیا ، جو بھینس چوری کرتا تھا اس کیلئے ایک اور قانون تھا اور یہ جو اربوں روپے روپے چوری کر کے لے کر جارہے تھے ان کو پاکستان کا احتساب کا نظام نہیں پکڑتا تھا ، اب ان کو مشکل پڑ گئی ہے ،پہلی دفعہ جو کیسز نیب کے اندر ان کے دور میں بنے ہوئے تھے ، ہم نے نہیں کیسز بنائے ، یہ ان کے دور کے کیسز تھے ، ہمارے دور میں نیب کو آزاد چھوڑ دیاہے ، ان کے دور میں نیب غلام تھی ، یہ مجھے اس لیے بلیک میل کر رہے ہیں کہ میں کسی طرح نیب کو ختم کر دوں اور کسی طرح ان کی چوری بچ جائے ۔عمران خان کا کہناتھا کہ نوازشریف کی شکل آپ نے دیکھی کہ بیمار ہو گیاہے اور پتا نہیں زندہ بھی رہے گا یا نہیں ، بڑے لوگوں نے کہا کہ عمران خان یہ تم کیا کر رہے ہو کہ کہیں مرہی نہ جائے ، ہماری کابینہ میں موجود خواتین کی آنکھوں میں بھی آنسو آ گئے اس کی تصویر دیکھ کر لیکن جیسے ہی لندن گیا تو ایسی ہوا لگی کہ ساری بیماریاں ختم ہو گئیں ۔وزیراعظم کا کہناتھا کہ جتنے مرضی جلسے کرنے ہیں کر لو لیکن جب تک لوٹا ہوا پیسہ واپس نہیں دیں گے آپ کو نہیں چھوڑوں گا ،وہ آدمی لندن میں بیٹھ کر ہماری فوج کے خلاف سازش کرتا ہے ، وہ یہ کہہ رہاہے کہ فوج کے اندر بغاوت کی جائے ، اپنی چوری بچانے کیلئے نوازشریف تم ادھر تک پہنچ گئے ہو کہ فوج کے خلاف ہندوستان کی زبان بول رہے ہو ، اس سے میرا عزم اور مضبوط ہو رہاہے کہ تمہاری طرح کے لوگ ان کو انشاءاللہ جب تک قانون کے نیچے نہیں لائیں گے اور ان کا پیسہ نہیں نکالیں گے میں انہیں چھوڑوں گا ۔عمران خان نے کہا میری حکومت ایسے الیکشن کروائے گی جو ہارے گا وہ بھی مانے گا کہ الیکشن شفاف ہواہے ، ہم الیکٹرانک ووٹنگ سے پورا فائدہ اٹھائیں گے ، ہم وہ سارے قدم اٹھائیں گے جب سارے کہیں گے صاف اور شفاف الیکشن ہوئے ہیں ، ہم الیکشن اصلاحات کرر ہے ہیں اور ٹیکنالوجی لا رہے ہیں ، جس طرح کرکٹ کی دنیا میں پہلا کپتان تھا جو نیوٹرل ایمپائر لے کر آیا اسی طرح پہلا وزیراعظم ہوں گا جو صاف الیکشن کروائے گا ۔






%d bloggers like this: