این اے 75 ڈسکہ: تحریک انصاف اور مسلم لیگ ن میں کانٹے دار مقابلہ جاری، کون کس پر برتری لے گیا ؟ غیرسرکاری اور غیرحتمی نتائج کا اعلان

<!– –>

<!–

(adsbygoogle = window.adsbygoogle || []).push({});
–> <!–

googletag.cmd.push(function() { googletag.display(‘div-gpt-ad-1518176776442-0’); });

–>
<!–

googletag.cmd.push(function() { googletag.display(‘div-gpt-ad-1518766058477-0’); });

–>

ڈسکہ(ویب  ڈیسک) قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 75ڈسکہ میں مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف میں کانٹے دار مقابلہ جاری ہے، تحریک انصاف کے امیدوار اسجد ملہی6100 ووٹوں کے ساتھ آگے جبکہ مسلم لیگ ن کی امیدوار سیدہ نوشین 5845 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔ غیرسرکاری اور غیرحتمی نتائج کے مطابق حلقہ این اے 75 ڈسکہ کے25 پولنگ اسٹیشنزکے انتخابی نتائج آئے ہیں جن میں تحریک انصاف کے امیدوار اسجد ملہی6100 ووٹوں کے ساتھ آگے ہیں، جبکہ مسلم لیگ ن کی امیدوار سیدہ نوشین 5845 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔



تاہم ابھی حلقے میں نتائج کا سلسلہ جاری ہے، ضمنی انتخاب میں حلقہ این اے 75 انتہائی گرم رہا ہے، یہاں پر سارا دن لڑائی جھگڑے اور فائرنگ کے واقعات جاری رہے، فائرنگ سے 2 افراز جاں بحق جبکہ 7زخمی بھی ہوئے۔


اسی طرح حلقے کا سب سے زیادہ کشیدہ پولنگ اسٹیشن ڈسکہ کلاں تھا۔ حلقے میں پولنگ کے دوران ناخوشگوار واقعات پر مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی فائرنگ سے متعلق بے بنیاد الزامات عائد کر رہے ہیں، فائرنگ کے واقعے میں کچھ لوگ زخمی ہوئے ہیں، قتل بھی ہوا، ڈسکہ سے20 میل دور گاؤں ہے ان کے دو گروپوں میں فائرنگ ہوئی ان کی پہلے سے دشمنی ہے۔


میں جہاں پر ڈسکہ میں موجود تھا وہاں اس قسم کا کوئی واقعہ نہیں ہوا ہے، دوسرا یہ ہے کہ تحریک انصاف نے پولنگ اسٹیشن کے باہر ہوائی فائرنگ کروائی۔ ان کی کوشش ہے کہ ٹرن آؤٹ کم ہو، ووٹ جو بھی نکل رہا ہے، وہ شیر کا نعرہ لگا رہا ہے، ان کے ٹینٹ ٹیبل کرسیاں خالی پڑے ہیں ان سے کوئی پرچی کٹوانے کو تیار نہیں تو ووٹ کون دے گا؟ساری پولیس نہیں کچھ لوگ اس معاملے میں ملوث ہیں، میاں قدیر نامی انسپکٹر ہے جو ڈسکہ میں فائرنگ کے واقعے میں خود ملوث ہے، وزیر آباد میں ایک پولنگ اسٹیشن میں پولیس والے نے جعلی ووٹ کاسٹ کیا۔

دوسری جانب حکومتی رہنماؤں فیاض الحسن چوہان اور عثمان ڈار نے کہا کہ الیکشن کمیشن رانا ثنا اللہ کی پولنگ کیمپ میں میڈیا گفتگو کا نوٹس لے۔ ن لیگ نے کرائے کے غنڈوں کے ذریعے انتخابی عمل کو متنازع بنایا ہے۔ لیگی اراکین اسمبلی این اے 75 کے ضمنی انتخابات میں اثرانداز ہورہے ہیں۔ فیاض الحسن نے کہا کہ ن لیگ کی طرف سے شفاف انتخابی عمل سبوتاژ کیا جا رہا ہے۔ واضح رہے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 75 سیالکوٹ میں ہونے والے ضمنی الیکشن کے دوران 5 پولنگ سٹیشنز کے قریب نا معلوم افراد کی فائرنگ سے 2 افراد جاں بحق جب کہ 7 زخمی ہوگئے ، جس کے باعث ووٹرز میں خوف و ہراس پھیل گیا۔






<!–

–>


%d bloggers like this: