بال بال بچ گئے خدانخواستہ علامہ خادم حسین رضوی کی وفات دھرنے میںہوجاتی توکیا کچھ ہوتا۔۔۔ شیخ رشید کا اہم بیان سامنے آگیا

اسلام آباد،راولپنڈی(مانیٹرنگ ڈیسک،این این آئی)نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ سیاست میں لمحات بہت اہم ہوتے ہیں،اگر خدانخواستہ علامہ خادم حسین رضوی صاحب کا انتقال دھرنے کے دوران ہو جاتا تو حکومتکولینے کے دینے پڑ جاتے،لوگو ںنے تو یہی کہنا تھا کہ۔۔۔پاکستان میں میڈیابہت ایکٹو ہو چکا ہے،میزبان کی جانب سے ان سے سوا ل کیا گیا کہ تحریک لبیک والوں سے جو معاہدہ کیا گیا اس کا کیا بنے گا ؟ اس کے جواب میں شیخ رشید نے کہا کہ فرانس نے جو کچھ کیا اس کی

جتنی بھی مذمت کی جائے وہ کم ہے ۔ میں تو چاہتا ہوں کہ اسلامی دنیا کو اس سے بھی زیادہ سخت فیصلہ کرنا چاہئے تھا،ہم میں فیصلے کی وہ قوت نہیں ہے ، ہمیں بہت بڑی غلط فہمی ہے ، ہمارا ٹیسٹ تو فرنچ نہیں ہے ، ہمارا ٹیسٹ پینڈو پروڈکشن کا ہے ، ہم ان کا بائیکاٹ بھی کریں تو آخرکتنا فرق پڑیگا؟یہ تو عالم اسلام کا ہے کہ دبئی میں کوئی فرنچ چیز لینڈ نہیں کریگی ۔ وہاں ان کے بڑے بڑے بزنس ایکسپو ہیں ، دریں اثناوفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ یہ مسلم لیگ ن کا دہرا معیار ہے کہ ووٹ کو عزت دو مگر ووٹر کو کورونا سے مرنے دو۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ کورونا سے ملک کی بنیادیں ہل جائیں انہیں کوئی فرق نہیں پڑتا۔وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ ان کی اولادیں اور رشتے دار ملک سے باہر ہیں، انہیں غریب کا بچہ قربانی کے لیے درکار ہے۔

Leave a Reply

%d bloggers like this: