جعلی ڈاکومنٹس کے ذریعے ماڈل ایان علی کے فلیٹ پر قبضے کی کوشش کا انکشاف

جعلی ڈاکومنٹس کے ذریعے ماڈل ایان علی کے فلیٹ پر مبینہ طور پر قبضے کی کوشش کا انکشاف

کراچی میں ماڈل ایان علی کے فلیٹ پر مبینہ طور پر قبضے اور جعلی کاغذات کی بنیاد پر فروخت کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

یہ انکشاف ماڈل ایان علی نے خود نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کے دوران کیا، انہوں نے کہا کہ میرے فلیٹ کو فروخت کرنے کا معاہدہ تیار کیا گیا اور اس پر میرے جعلی دستخط بھی کیے گئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ میں پاکستان میں موجود نہیں ہوں، میری غیر موجودگی میں میرے فلیٹ پر قبضے اور اسے فروخت کرنے کی کوشش کی گئی ہے، میں یہ بات واضح کرنا چاہتی ہوں کہ میں نے فلیٹ کسی کو فروخت نہیں کیا اور نہ ہی میں نے اس کے بدلے میں کوئی رقم وصول کی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ فلیٹ کی فروخت کے بدلے میں ادائیگی کا چیک بھی تیار کیا گیا جسے متحدہ عرب امارات نے جعلی قرار دیا ہے، جبکہ فروخت کے معاہدے پر میرا جو قومی شناختی کارڈ نمبر درج کیا گیا ہے وہ بھی غلط ہے، میں نے اس جعل ساز کے خلاف قانونی کارروائی بھی شروع کردی ہے۔

واضح رہے کہ ماڈل ایان علی کو 14 مارچ 2015 کو اسلام آباد سے دبئی جاتے ہوئے بینظیر بھٹو ائیرپورٹ پر حراست میں لیا گیا تھا اور ان کے پاس سے 5 لاکھ ڈالرز برآمد ہوئے تھے۔بعد ازاں ماڈل کے خلاف کرنسی اسمگلنگ کا مقدمہ درج کیا گیا جس پر انہیں جیل بھی جانا پڑا جب کہ ان کا نام ای سی ایل میں دیا گیا۔

The post جعلی ڈاکومنٹس کے ذریعے ماڈل ایان علی کے فلیٹ پر قبضے کی کوشش کا انکشاف appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: