حضرت مرشد عالم نے ایک عجیب واقعہ سنایا، فرمانے لگے کہ ہم حرم شریف میں تھے ایک چھوٹا بچہ خیمہ میں آتا،ہم اسے کھانا دیتے، اس کے آنے سے ہمیں اسکے ساتھ  محبت ہو گئی، جب ہمارا قیام پورا ہو گیا اور ہمیں آگے سفر جانا تھا تو میری اہلیہ نے۔۔۔

حضرت مرشد عالمؒ نے ایک عجیب واقعہ سنایا۔ فرمانے لگے کہ ہم حرم شریف میں تھے۔ ایک چھوٹا سا بچہ ہمارے خیمہ میں آتا۔ ہم اسے کھانا دیتے۔ اس کے آنے سے ہمیں اس کے ساتھ محبت ہو گئی۔ جب ہمارا قیام پورا ہو گیا اور ہمیں آگے سفر جانا تھا تو میری اہلیہ نےاس بچے کو بلایا اور کہا کہ تم ہمارے ساتھ چلو تو ہم تمہیں لے چلتے ہیں۔ اس نے کہا، کہاں؟ انہوں نے کہا کہ اپنے ملک میں۔ وہ کہنے لگا۔ ’’وہاں کیا ہو گا؟‘‘ انہوں نے کہا وہاں گرمی بھی بہت کم ہے تمہیں وہاںہر

سہولت میسر ہو گی غرض ہر طرح کی نعمت ملے گی۔ انہوں نے بات مکمل کر لی تو اس وقت بچے نے بیت اللہ شریف پر نظرڈالی اور اس کی طرف اشارہ کیا اور پوچھا، کیا بیت اللہ شریف بھی وہاں ہوگا؟ انہوں نے جواب دیا کہ یہ تو وہاں نہیں ہوگا۔ یہ سن کر بچہ کہنے لگا کہ اگر یہ وہاں نہیں ہوگا تو مجھے وہاں جانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ مجھے تو صرف بیت اللہ کا پڑوس چاہیے۔

Leave a Reply

%d bloggers like this: