خاتون اول ثمینہ علوی کو پاکستانی ڈرامے کیوں افسردہ کرتے ہیں؟

پاکستانی ڈرامے دیکھ کر افسردہ ہو جاتی ہوں، خاتون اوّل ثمینہ علوی

پاکستان کی خاتون اول بیگم ثمینہ عارف علوی نے کہا کہ وہ پاکستانی ڈرامہ نہیں دیکھتی کیونکہ اس سے وہ افسردہ ہوجاتی ہے۔ انہوں نے یہ بات انڈیپنڈنٹ اردو کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں کہی۔

انہوں نے مزید کہا کہ وہ "بار بار ایک ہی طرح کی کہانیوں” کی وجہ سے انہیں نہیں دیکھتی ہیں۔ خاتون اول نے کہا "پاکستانی ڈرامہ مجھے افسردہ کرتا ہے ان میں کوئی نئی بات نہیں ہوتی”۔

انہوں نے بتایا کہ جب ان ڈراموں کے ہدایتکاروں اور بنانے والوں سے ملاقات کی تو انہوں نے کہا کہ ایسے موضوعات ریٹنگ دیتے ہیں دیگر موضوعات ٹی وی چینلوں کو ریٹنگ نہیں دیتے اس لیے ایسے ڈرامے بنانا ان کی مجبوری ہے۔

تاہم خاتون اول نے کہا کہ وہ اس بات سے اتفاق نہیں کرتیں اور انہیں لگتا ہے کہ اگر نئے موضوعات پر ڈرامے بنیں گے تو لوگ ضرور دیکھیں گے اور تعریف بھی کریں گے۔

انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ ہدایتکار اور پروڈیوسرز نئی کہانیاں بناکر ان کو آزمائیں لوگ ضرور پسند کریں گے۔ انہوں نے ایک سوال کے جوب میں بتایا کہ کورونا لاک ڈاؤن کے دوران جب وہ صرف گھر میں ہوتی تھیں تو تب انہوں نے ارطغرل کی کچھ اقساط دیکھیں، خاتون اول نے اس ڈرامے کی بھرپور تعریف کی۔

ان سے قبل صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی بھی ترک سیریز ارطغرل غازی کی تعریف کر چکے ہیں ایک نجی ٹی وی چینل کو اپنے انٹرویو میں انہوں نے کہا تھا کہ ہمیں بھی ایسی کہانیاں تخلیق کرنی چاہیے۔

صدر مملکت نے یہ بھی کہا تھا کہ ہمیں ٹیپو سلطان اور سراج الدولہ جیسی مسلم شخصیات کی زندگی پر ڈرامے بنانے چاہییں تاکہ آنے والی نسل کو اس بارے میں علم ہو۔

The post خاتون اول ثمینہ علوی کو پاکستانی ڈرامے کیوں افسردہ کرتے ہیں؟ appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: