رکن قومی اسمبلی مولانا صلاح الدین ایوبی کی 14 سالہ لڑکی سے شادی

چترال کی خواتین کی فلاح و بہبود کیلئے کام کرنے والی ایک تنظیم کے مطابق اسی علاقے کی 14 سالہ لڑکی کی متحدہ مجلس عمل کے بلوچستان سے تعلق رکھنے والے رکن قومی اسمبلی مولانا صلاح الدین ایوبی سے شادی کرائی گئی ہے۔

خواتین کے حقوق کے لیے کام کرنے والی اس تنظیم نے مقامی پولیس کو اس کم عمری کی شادی سے متعلق اطلاع دی ہے جس پر پولیس نے درخواست پر کارروائی کا آغاز کر دیا ہے۔

چترال پولیس نے اس درخواست کے موصول ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس درخواست پر ایڈیشنل ایس ایچ او رحمت عظیم کو انکوائری افسر مقرر کیا گیا ہے۔ انکوائری افسر کے مطابق اس کیس پر تفتیش شروع ہو چکی ہے۔ لڑکی کے خاندان والوں کا تعلق چترال کے قصبے دروش سے ہے، لیکن اس وقت یہ لوگ ضلع سے باہر ہیں۔ جب چترال آئیں گے تو کیس میں پیش رفت ہو گی۔

سکول ریکارڈ کے مطابق لڑکی کی تاریخ پیدائش ستمبر 2006 ہے اس طرح اس کی عمر 14 برس بنتی ہے۔

ملکی قوانین کے مطابق شادی کے لیے لڑکی کی کم از کم عمر کی حد 16 سال مقرر ہے، اس سے کم عمر بچی سے شادی جرم کے زمرے میں آتی ہے۔ 16 سال سے کم عمر کے بچی کے شادی میں اگر والدین یا سرپرست کی رضامندی شامل ہو، تو وہ بھی جرم میں برابر کے شریک ہوں گے اور اس کے علاوہ نکاح خواں اور گواہ بھی جرم میں معاون سمجھے جائیں گے۔

مولانا صلاح الدین ایوبی کا تعلق جے یو آئی (ف) سے ہے، وہ بلوچستان سے رکن قومی اسمبلی منتخب ہیں اور اس وقت پارلیمنٹ کا حصہ ہیں۔

The post رکن قومی اسمبلی مولانا صلاح الدین ایوبی کی 14 سالہ لڑکی سے شادی appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: