علامہ خادم حسین رضوی کے جنازے میں کتنے لاکھ لوگ شریک ہوئے؟ تمام ریکارڈ ٹوٹ گئے

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک+ این این آئی) تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ علامہ خادم حسین رضوی کی نماز جنازہ میں لاکھوں افراد نے شرکت کی، شرکاء کی تعداد کے بارے میں حتمی طور پر کچھ نہیں کہا جا سکتا کہ وہ اتنے لاکھ تھے، صرف اندازے سے ہی بات کی جا سکتی ہے، تحریک لبیک کے ذرائع کا دعوی ہے کہ جنازے میں دس لاکھ سے زائد لوگ شریک ہوئے،دوسری جانبحکومتی اداروں کے اعداد و شمار کے مطابق پانچ لاکھ افراد نے علامہ خادم حسین رضوی کی نماز جنازہ میں شرکت کی۔ واضح رہے کہ تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ علامہ خادم

حسین رضوی کو نماز جنازہ کی ادائیگی کے بعد مسجد رحمت العالمین سے ملحقہ مدرسہ ابوذر غفاری میں سپرد خاک کر دیا گیا، نماز جنازہ مینار پاکستان گراؤنڈ (گریٹر اقبال پارک)میں ادا کی گئی جس میں ملک بھر سے بڑی تعداد میں تحریک کے کارکنان اورعقیدتمندوں نے شرکت کی،نماز جنازہ میں وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نو ر الحق قادری، چیئرمین مرکزی رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمان سمیت دیگر مذہبی و سیاسی شخصیات اورمختلف درگاہوں کے گدی نشینوں نے شرکت کی، نماز جنازہ کے موقع پر پولیس کی جانب سے سکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے جبکہ تحریک لبیک کے رضا کاربھی فرائض سر انجام دیتے رہے، کمشنر لاہور ڈویژن مرکزی کنٹرول روم میں بیٹھ کر سکیورٹی سمیت دیگر انتظامات کی خود نگرانی کرتے رہے۔تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ علامہ خادم حسین رضوی کا جسد خاکی بذریعہ ایمبولینس نماز جنازہ کے مقام مینار پاکستان لے جایا گیا۔ ہزاروں کی تعداد میں کارکنان اورعقیدتمند میت لے جانے والی ایمبولینس کے ساتھ پیدل چلتے رہے، اس موقع پر ملتان روڈ پر دکانیں بند رہیں، ملتان روڈ سے آزادی فلائی اوور تک راستے کے دونوں اطراف لوگوں کی بڑی تعدادموجود رہی جو ایمبولینس پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کرتے رہے۔ ایمبولینس کے ہمراہ چلنے والے شرکاء لبیک یارسول اللہ، تاجدار ختم نبوت زندہ باد کے نعرے اور درود پاک پڑھتے رہے۔ نماز جنازہ میں لاہور سمیت صوبہ بھر سے قافلے مینار پاکستان پہنچتے رہے جبکہ بہت بڑی تعداد میں لوگ نماز جناز ہ کیلئے طے کئے گئے وقت سے پہلے ہی مینار پاکستان گراؤنڈ میں پہنچ گے۔

Leave a Reply

%d bloggers like this: