ملکی کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں78 فیصد کمی ہوئی، اسٹیٹ بینک

ملکی کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں78 فیصد کمی ہوئی، اسٹیٹ بینک

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق رواں مالی سال میں ملکی کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں 78 فیصد کمی ہوئی ہے۔ اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ مالی سال 2020 میں کرنٹ اکاؤٹ خسارہ جی ڈی پی کا1.1 فیصد رہا۔ مالی سال 2020 کے اختتام پر کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 2 ارب 66 کروڑ ڈالر رہا۔

گزشتہ مالی سال 2019 کے اختتام پر کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 13ارب 43 کروڑ ڈالر تھا جو مجموعی ملکی پیداوار(جی ڈی پی) کا 4.8 فیصد ریکارڈ کیا گیا تھا۔ رواں مالی سال کے اختتام تک 22 ارب 50 کروڑ ڈالر کی اشیا برآمد اور 42ارب 41 کروڑ ڈالر کی درآمد کی گئیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ ہفتے اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے بتایا تھا کہ رواں سال جون میں ریکارڈ سطح کی ترسیلات زر موصول ہوئیں۔ اسٹیٹ بینک کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق جون کے دوران ترسیلات زر میں50.7 فیصد کا نمایاں اضافہ ہوا۔
رواں مالی سال کے اختتام پر ترسیلات زر 23ارب 12 کروڑڈالر ریکارڈ کی گئیں جب کہ مالی سال 2019 کے اختتام پر 24.25 ارب ڈالر کی برآمد کی گئیں تھیں۔ مالی سال 2019 کے اختتام پر 51.86 ارب ڈالر کی اشیا درآمد ہوئیں تھیں۔

The post ملکی کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں78 فیصد کمی ہوئی، اسٹیٹ بینک appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: