نعیم بخاری کی تعیناتی سپریم کورٹ کے فیصلے کی خلاف ورزی ہے،اسلام آباد ہائی کورٹ

نعیم بخاری کی تعیناتی سپریم کورٹ کے فیصلے کی خلاف ورزی ہے،اسلام آباد ہائی کورٹ

اسلام آباد ہائی کورٹ میں  پی ٹی وی نعیم بخاری کی تعیناتی کے خلاف کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ جسٹس اطہر من اللہ کا نعیم بخاری کی تعیناتی کے خلاف کیس کی سماعت کرتے ہوئے کہنا تھا کہ نعیم بخاری کی تعیناتی بادی النظر سپریم کورٹ کے فیصلے کی خلاف ورزی ہے۔

چیئرمین پی ٹی وی نعیم بخاری کی تعیناتی کے خلاف کیس کی سماعت کرتے ہوئے چیف جسٹس اطہر من اللہ کا ریمارکس دیتے ہوئے کہنا تھا کہ نعیم بخاری صاحب ہمارے لیے قابل احترام ہیں لیکن سپریم کورٹ کے فیصلے کو نظراندازنہیں کر سکتے، بادی النظر نعیم بخاری کی تعیناتی سپریم کورٹ کے فیصلے کی خلاف ورزی ہے۔ سپریم کورٹ کا بڑا واضح فیصلہ ہے اس پرعمل بھی ضروری ہے۔

کیس کی سماعت کرتے ہوئے عدالت نے اٹارنی جنرل خالد جاوید خان کو آئندہ سماعت پر عدالتی معاونت کی ہدایت کر دی ہے، اس کے علاوہ عدالت نے سیکرٹری وزارت اطلاعات و نشریات کے مجاز افسر کو بھی آئندہ سماعت پر عدالت طلب کر لیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ ماہر قانون نعیم بخاری کو کچھ عرصہ پہلے چیئرمین پی ٹی وی کے عہدے پر تعینات کیا گیا ہے، ان کی تقرری کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے ان کو عہدے سے ہٹانے کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی گئی تھی۔

The post نعیم بخاری کی تعیناتی سپریم کورٹ کے فیصلے کی خلاف ورزی ہے،اسلام آباد ہائی کورٹ appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: