نماز جنازہ ادائیگی کے بعد علامہ خادم حسین رضوی کو کہاں سپردخاک کیا جائیگا؟اہل خانہ کا اہم بیان آگیا

اسلام آباد،لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک، این این آئی)ٹی ایل پی کے امیر علامہ خادم حسین رضوی کے عزیزو اقارب اور خاندانی ذرائع کے مطابق ان کی تدفین ان کی رہائشگاہ مدرسہ ابوذر غفاری میں ہی کی جائیگی، جس کی تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔علامہ خادم حسین رضوی کی نماز جنازہمینار پاکستان پر ادا کرنے کے بعد دوبارہ ان کی میت کو ان کی رہائشگاہ پر لایا جائے گا جہاں ان کی تدفین کی جائے گی۔ دریں اثناتحریک لبیک پاکستان کے سربراہ علامہ خادم حسین رضوی کے نماز جنازہ میں ملک بھر سے کارکنوں اور عقیدت مندوں کی کثیر تعداد میں شرکت

کے باعث صوبائی دارالحکومت لاہورمیں سکیورٹی کے غیر معمولی انتظامات کئے گئے۔ کیپٹل سٹی پولیس چیف محمد عمر شیخ کی ہدایت پر شہر بھر میں سکیورٹی کوہائی الرٹ رکھا گیا ، شہر کے داخلی و خارجی راستوں پر سکیورٹی بڑھا دی گئی اور گاڑیوں کی چیکنگ کو مزید سخت کر دیا گیا۔ مینار پاکستان کے گردونواح میں پولیس کی بھاری نفری تعینات رہی ۔ محمد عمر شیخ کی ہدایت پر ڈولفن و پیرو اور پٹرولنگ گاڑیاں موونگ پوزیشن میں رہیں۔سی سی پی او کی ہدایت پر تمام ڈویژنل آپریشنل افسران فیلڈ میں موجود رہے اور سکیورٹی انتظامات کی نگرانی کرتے رہے ۔ نماز جناز ہ میں لوگوں کی غیر معمولی تعداد میںشرکت کے باعث سیف سٹی کیمروں کی مدد سےبھی سکیورٹی کو یقینی بنایا گیا ۔علاوہ ازیں تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ علامہ خادم حسین رضوی کی مینار پاکستان گرائونڈ پر نماز جنازہ کی وجہ سے میٹرو بس سروس کو شاہدرہ سے ایم اے او کالج تک بند رکھاگیا ۔ ایم اے او کالج سے گجومتہ تک میٹرو بس سروس جار ی رہی ۔

Leave a Reply

%d bloggers like this: