ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے کیلئے امریکی ایوان نمائندگان میں مواخذے کی قرار داد منظور

مظاہرین کو ’بغاوت پر اکسانے‘ اور کیپٹل ہل پر حملے الزام میں ایوان نمائندگان نے امریکی صدر کے خلاف دوسری مرتبہ مواخذے کی منظوری دے دی، امریکی تاریخ میں ڈونلڈ ٹرمپ دو بار مواخذے کا سامنا کرنےوالے صدر بن گئے ہیں،ایوان کے 332 اراکین نے قرارداد کے حق میں جبکہ 197 نے مخالفت میں ووٹ دیا ہے۔

ٹرمپ کی ری پبلکن پارٹی کے 10 اراکین نے مواخذے کے حق میں ووٹ دیا جبکہ 4 ری پبلکن اراکین نے قرارداد پر ووٹ نہیں دیا،معاملہ اب سینیٹ کو بھیجا جائے گا،امریکی صدر سینیٹ میں ٹرائل کاسامنا کرینگے،کارروائی بیس جنوری کے بعد متوقع ہے،مقدمے کی سماعت جو بائیڈن کی حلف برداری کے بعد شروع ہوگی۔

امریکا کی 231 سالہ تاریخ میں پہلی بار کسی صدر کا دو بار مواخذہ کیا جا رہا ہے۔ ایک ایسے صدر جو اپنے دور صدارت کی تاریخی کامیابیوں پر فخر کرنا چاہتے ہیں، ان کے منصب کا یہ انجام انتہائی شرمناک ہے،

ابھی ایک سال قبل ہی ایوان نمائندگان نے پہلی بار ایک بھی رپبلکن ووٹ کے بغیر صدر ٹرمپ کا مواخذہ کیا تھا، اس مرتبہ ان کی اپنی جماعت کے 10 ممبران نے اس قرارداد کی حمایت کی اور اس کے علاوہ کئی اراکین نے دارالحکومت میں ہنگامہ آرائی کے دن ان کے الفاظ اور اقدامات کی مذمت کی ہے۔

مواخذے میں صدر ٹرمپ پر یہ الزام عائد کیا گیا ہے کہ انہوں نے وائٹ ہاؤس کے قریب اپنی حامی ریلی میں ہزاروں افراد سے خطاب کرتے ہوئے انھیں دارالحکومت میں ہنگامہ آرائی کرنے پر اکسایا تھا،مختلف اداروں نے بھی ٹرمپ سے ناپسندیدگی کا اظہار کیا،نیو یارک سٹی کے اسکی ریزورٹ نے معاہدے ختم کرنے کا اعلان کردیا،جبکہ ٹوئٹر کے بعد اسنیپ چیٹ اکاؤنٹ بھی بند کر دیا گیا،ڈیموکریٹس رکن کا شکاگو کی اٹھانوےمنزلہ عمارت سےٹرمپ کا نام ہٹانے کا مطالبہ کیا گیا۔

The post ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے کیلئے امریکی ایوان نمائندگان میں مواخذے کی قرار داد منظور appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: