پاکستانی سائنسدانوں کا شاندار کارنامہ، پاکستان نے کورونا وائرس کی تشخیص کا جدید آلہ تیار کر لیا،

اسلام آباد (آن لائن) پاکستان نے پھیپڑوں میں کورونا وائرس کی تشخیص کا جدید آلہ تیار کر لیا،ڈریپ نے کورونا کی جدید تشخیصی میڈیکل ڈیوائس کووریڈ کی منظوری دیدی،سی ای او ڈریپ ڈاکٹر عاصم رؤف کی میڈیکل ڈیوائس رجسٹریشن کی تصدیق کردی۔
سی ای او ڈریپ ڈاکٹر عاصم کا کہنا تھا کہ ڈیوائس کو ڈریپ ایکٹ 2012 کے تحت رجسٹرڈ کیا ہے کووریڈ ڈیوائس مکمل طور پر مقامی سطح پر تیار کردہ ہے کووریڈ پھیپڑوں میں کورونا کے انفیکشن کی تشخیص کرے گی کووریڈ سے پھیپڑوں میں کورونا انفیکشن کی مقدار معلوم ہو سکے گی میڈیکل ڈیوائس ایک منٹ سے کم

وقت میں نتائج دیتی ہے، کووریڈ ڈیوائس سے کورونا کے علاج میں نمایاں مدد ملے گی، کووریڈ میڈیکل ڈیوائس دنیا کے چند ممالک کے پاس ہے، پاکستان کووریڈ ٹیکنالوجی دنیا کے دیگر ممالک کو فراہم کرے گا کووریڈ ڈیوائس جلد ملک بھر میں دستیاب ہو گی کووریڈ ڈیوائس نیشنل الیکٹرانکس کمپلیکس پاکستان کی تیار کردہ ہے کووریڈ ڈیوائس کی مقامی سطح پر تیاری بڑی کامیابی ہے۔سائنس ڈپلومیسی پاکستان نے کہا کہ پاکستان یہ ٹیکنالوجی دیگر ممالک سے شیئر کرنے کے لیے تیار ہے۔کورونا وائرس کی تشخیص کا سافٹ ویئر ’کووریڈ‘ بنانے پر نیکاپ کی جانب سے پاکستانی سائنسدانوں کو خراجِ تحسین پیش کیا گیا ہے۔

Leave a Reply

%d bloggers like this: