پولیس کے مظالم سے تنگ آئے آندھرا پردیش کے مسلم خاندان نے خودکشی کرلی

بھارت میں پولیس کی جانب سے جھوٹے کیسز میں مسلسل تنگ اور ہراساں کیے جانے پر مسلمان خاندان نے ٹرین کے اگے چھلانگ لگاکر اپنی جانیں دیدیں۔

دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کے دعویدار بھارتی اقلیتیوں پر زمین تنگ کرنے لگے، بین الاقوامی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق آندھرا پردیش کے علاقے کرنول کے رہائشی 42 سالہ عبدالسلام نے اپنی 36 سالہ بیوی نور جہاں، 14 سالہ بیٹی اور 10 سالہ بیٹے کے ہمراہ گزشتہ رات ٹرین کے سامنے چھلانگ لگاکر اپنی جان دی انہوں نے اس سارے منظر کو اپنے موبائل کے سیلفی کیمرے میں قید بھی کیا۔

عبدالسلام نے اپنی ویڈیو بناتے ہوئے بتایا کہ پولیس ہمیں مسلسل کسی چوری کے الزام میں پریشان کررہی ہے، ہمارا ایسی کسی واردات سے کوئی تعلق ہے اور نہ ہم نے کوئی غلطی کی ہے، ہمیں پولیس ہراساں کررہی ہے میں یہ برداشت نہیں کرسکتا، ہمارا کوئی مددگار بھی نہیں ہے اس لیے خاندان کے ہمراہ خود کشی کررہا ہوں۔

واقعے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد اندھرا پردیش کی حکومت نے تحقیقاتی کمیشن قائم کردیا ہے تاہم اب تک ان پولیس اہلکاروں کی نشاندہی نہیں ہوسکی ہے جو اس خاندان کو ہراساں کرنے میں ملوث تھے۔

مسلمانوں کے حقوق کی تنظیم اقلیتی حقوق تنظیم برائے تحفظ کے رہنما فاروق شبلی محمد کا کہنا تھا کہ اندھرا پردیش میں ظلم و بربریت کا شکار ہونے والا یہ پہلا مسلمان کنبہ نہیں تھا، یہاں ایسے کئی واقعات پیش آچکے ہیں میں ایسے دس واقعات کی تفصیل پیش کرسکتا ہوں، لیکن ان واقعات پر کوئی ایکشن کبھی نہیں لیا جاتا تاہم ہم مسلسل ان واقعات کے خلاف آواز اٹھا رہے ہیں اور آگے بھی اٹھاتے رہیں گے۔

The post پولیس کے مظالم سے تنگ آئے آندھرا پردیش کے مسلم خاندان نے خودکشی کرلی appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: