ڈاکٹر شاہد مسعود کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری کیوں جاری ہوئے؟

ڈاکٹر شاہد مسعود کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری کیوں جاری ہوئے؟ صحافی اعزازسید کا دعویٰ

جیو نیوز سے منسلک نوجوان صحافی اعزاز سید نے سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر دعویٰ کیا کے کراچی کی ایک مقامی عدالت نے معروف اینکر پرسن ڈاکٹر شاہد مسعود کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے ہیں۔

اعزاز سید نے اس کے تناظر میں دو واقعات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ پیپلزپارٹی سے جڑے سیاسی کارکن اور وزیر تعلیم سندھ سعید غنی کی طرف سے دائر ہتک عزت کیس میں اینکر شاہد مسعود کے خلاف کراچی کی عدالت سے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری۔

یاد رہے کہ سعید غنی نے 9 فروری 2018 کو کراچی کی مقامی عدالت میں اینکر شاہد مسعود کے خلاف ہتک عزت کا دعویٰ دائر کرنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا تھا کہ اینکر کی جانب سے مسلسل ان کے خلاف بے بنیاد الزامات لگائے جارہے تھے۔ اس حوالے سے عدالت سے رجوع کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج جنوبی کی عدالت میں ٹی وی اینکر ڈاکٹر شاہد مسعود کے خلاف صوبائی وزیر سعید غنی کی ہتک عزت کی درخواست دائر تھی جس پر ممکنہ طور پر اسی عدالت کی جانب سے اب نا قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے گئے ہیں۔

اس سے قبل عدالت کی جانب سے شاہد مسعود کے پیش نہ ہونے پر قابل ضمانت وارنٹ گرفتار بھی جاری کیے جا چکے ہیں۔

دوسری جانب صحافی اعزاز سید نے یہ بھی بتایا کہ ڈاکٹر شاہد مسعود نے ایک بار پھر سے جنگ گروپ کو جوائن کر لیا ہے۔

The post ڈاکٹر شاہد مسعود کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری کیوں جاری ہوئے؟ appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: