ڈرون حملوں کا حکم دینےکے بعد کبھی خوشی محسوس نہیں کی،باراک اوباما

ڈرون حملوں کا حکم دینےکے بعد کبھی خوشی محسوس نہیں کی،باراک اوباما

اپنے دور حکومت میں ڈرون حملوں کا حکم دے کر نہ کبھی خوشی محسوس کی نہ کبھی خود کو طاقتور سمجھا، سابق امریکی صدر

امریکہ کے سابق صدر بارک اوباما  کی کتاب”اے پرومسڈ لینڈ”  کے حوالے سے بزنس انسائیڈر نے ا یک تفصیلی خلاصہ  شائع کیا۔ خلاصے کے مطابق دہشتگردوں پر کیے جانے والے ڈرون حملوں اور ان حملوں کے نتیجے میں ضائع ہونے والی قیمتی جانوں کے حوالے سے اوباما نے اپنی کتاب میں لکھا ہے "انہوں نے اپنے دور حکومت میں ڈرون حملوں کا حکم دے کر کبھی بھی خوشی محسوس نہیں کی اور نہ ہی کبھی خود کو طاقتور محسوس کیا تھا”

بزنس انسائیڈر میں شائع ہونے والے خلاصے کے مطابق اوبامہ نے کتاب میں دعوی کیا کہ ان کے پہلے چیف آف اسٹاف راحم ایمانوئل دہشت گردوں کو جڑ سے ختم کرنے کے لیے بہت اتاولے تھے اور انہوں نے واشنگٹن میں یہ جاننے کے لئے کافی وقت گزارا کہ ان کے ملک کا نیا صدر دہشت گردوں کے لیے اپنے دل میں کوئی نرمی تو نہیں رکھتا۔

انہوں نے کہا کہ یمن، افغانستان، پاکستان اور عراق جیسی جگہوں پر لاکھوں نوجوان مایوسی، جہالت، شاندار مذہبی دور کا خواب، پرتشدد یا اپنے بزرگوں کی اسکیموں کی وجہ سے تنگ آچکے تھے، جس کی وجہ سے وہ خطرناک دانستہ اور لاشعوری طور پر تشدد کی کارروائیوں کا حصہ بنے، میں چاہتا تھا کہ ان کے ذہن سے یہ چیزیں نکال کر ان کو تجارتی مواقع فراہم کرتے ہوئے انہیں بچا سکوں اور اسکول بھیج سکوں تاکہ وہ تعلیم حاصل کر کے پر امن معاشرے کو فروغ دیں۔

سابق امریکی صدر نے کہا کہ میرا سیاست میں داخل ہونے کا مقصد بچوں کی بہتر تعلیم، ان کے اہلخانہ کو صحت کی سہولیات فراہم کرنے اور غریب ممالک کو زیادہ سے زیادہ خوراک کے حصول کے لیے مدد کرنے کا تھا لیکن اس سے بھی زیادہ ضروری کام دنیا سے شدت پسندی اور انتہا پسندی کا خاتمہ تھا، جس کے لیے میں نے ہمیشہ کوشش کی کہ ہمارے آپریشن زیادہ سے زیادہ موثر ثابت ہوں اور معاشرے میں امن کی فضا قائم ہو۔

بزنس انسائیڈر نے اپنے خلاصے میں مزید لکھا کہ ملک کی قومی سلامتی کے اداروں کو جنگ کی نئی شکلیں تیار کرنے کا چیلینج دیا گیا تھا کیونکہ القاعدہ منتشر ہو کر زیر زمین چلی گئی تھی جو انٹرنیٹ اور برنرز فون کے ذریعے اپنے ہمدردوں، آپریٹوز اور سلیپر سیلز سے رابطہ قائم کرنے کا پیچیدہ نظام بنا چکی تھی، جس کے خاتمے کے لیے ڈرون حملے بہت ضروری تھے۔

The post ڈرون حملوں کا حکم دینےکے بعد کبھی خوشی محسوس نہیں کی،باراک اوباما appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: