ہنگامہ آرائی کا خدشہ، ڈونلڈ ٹرمپ کا یوٹیوب چینل بند

ہنگامہ آرائی کا خدشہ، ڈونلڈ ٹرمپ کا یوٹیوب چینل بند

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر ایک اور پلیٹ فارم کا دروازہ بند کردیا گیا، گوگل کی ویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ یوٹیوب نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا چینل معطل کردیا،یوٹیوب کا کہنا ہے کہ ٹرمپ کے چینل سے ہماری پالیسیوں کے خلاف   مواد شیئر کیا گیا اور انہیں متنبہ بھی کیا گیا تھا۔

ٹرمپ کے چینل پر اپ لوڈ کی گئی آخری ویڈیو میں تشدد دکھایا گیا تھا جس کو کمپنی نے ہٹا دیا،امریکی صدر کے چینل کو بند کرنے سے قبل یوٹیوب نے متعدد ویڈیوز کو ہٹایا تھا اور وارننگ بھی جاری کی تھی۔

دوسری جانب گوگل انتظامیہ کا کہنا تھا کہ ہم نے ہزاروں ایسی ویڈیوز کو ہٹا دیا جن میں امریکی انتخابات کے حوالے سے غلط بیانی سے کام لیا گیا اور ان ویڈیوز میں ٹرمپ کی جانب سے اپ لوڈ کی گئی ویڈیوز بھی شامل ہیں۔

یوٹیوب کے مطابق 2020 کے انتخابات میں وسیع پیمانے پر دھاندلی کا الزام عائد کرنے والی ویڈیوز نے اس کی پالیسیوں کی خلاف ورزی کی ہے،ٹرمپ کے چینل کےسبسکرائبرز کی تعداد8 کروڑ سے زائد تھی۔

یوٹیوب نے پارلیمنٹ میں ہنگامہ آرائی والی ویڈیوز کو بھی پالیسی کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے ہٹا دیا تھا،اس سے قبل فیس بک، ٹوئٹر اور اسنیپ چیٹ  بھی امریکی صدر کا اکاؤنٹ بلاک کرچکے ہیں۔

ادھر صدر ٹرمپ کے مواخذے پر مسلح مظاہروں کے خدشے کے پیش نظر کیپٹل ہل میں نیشنل گارڈ کے دس ہزار اہلکار تعینات ہیں، پارلیمنٹ حملے سے متعلق ایف بی آئی کی تحقیقات جاری ہیں، ایک لاکھ سے زائد ویڈیوز اور تصاویر موصول ہوچکی ہیں، کیپٹل ہل ہنگاموں میں ہلاک پولیس اہلکار پرحملہ کرنے کی ویڈیو بھی سامنے آگئی ہے۔

ایف بی آئی کے مطابق ویڈیو میں دیکھا جاسکتا کہ نامعلوم شخص نے اہلکاروں پر آگ بجھانے والا سیلنڈر پھینکا، جو برائن سک کے سر پرلگا تھا، برائن زخمی ہوا جسے اسپتال منتقل کردیا گیا، جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہلاک ہوگیا۔

ایف بی آئی نے ممکنہ حملہ آور کی تصویر بھی جاری کردی، دوسری جانب امریکی محکمہ انصاف کا کہنا ہے کہ کیپٹل ہل حملے اور بغاوت پر اکسانے کی سزا بیس سال قید ہے۔

The post ہنگامہ آرائی کا خدشہ، ڈونلڈ ٹرمپ کا یوٹیوب چینل بند appeared first on Siasat.pk Urdu News – Latest Pakistani News around the clock.

%d bloggers like this: